جب دنیا کے کُزین کی بات آتی ہے تو بنیادی اجزاء جیسے کہ پروٹین اکثروبیشتر وہی رہتے ہیں۔ سوسز ہی کُزین کو اصل رنگ، ذائقوں کی پرتیں اور ایک شخصیت دیتے ہیں۔ گرم یا ٹھنڈا، میٹھا یا نمکین، سوسز ایک ٹیکسچر، نمی اور منفرد ذائقہ لے کر آتے ہیں۔

دنیا بھر میں سوئسز

مغربی

مغربی کُزین اپنا بیس فرینچ کُزین اور اگستے اسکوفیئر کے مشہورِ زمانہ 5 سوسز: بیشمیل، اسپانول، ویلوٹے، ہولینڈیز اور ٹومیٹ سے اخذ کرتے ہیں۔

ترکی اور مشرق وسطی

ان کُزین میں ٹماٹو پر مبنی سوسزکی مشہوری مَدَرسوسز کا عکس تجویز کرتے ہیں۔ پر وائٹ سوسز جیسا کہ ہیداری جوکہ میٹ بالز یا کباب کے ساتھ سرو کیا جاتا ہے میں دہی کی بیس استعمال ہوتی ہے۔ لہسن، تہینی یا لال مرچ سوسز میں ذائقہ بنانے کے لیے اہم اجزاء ہیں۔

ایشیائی

مغربی سوسزکا دارومدار ذائقوں اور اجزاء کو ملانے پر ہے پر ایشائی سوسز برعکس عناصرکو ترجیع دیتے ہیں، جیسا کہ سویٹ اور ساوَر۔ سوئے، ہوئزن اور اوئیسٹر سوسز، سیسیمی آئل اور رائس ونیگر، ان میں سے ہر ایک ایشیائی سوسز میں اپنا منفرد ذائقہ دیتا ہے۔

عالمی رجحانات

مشرق وسطی سب سے آگے: دنیا میں زیادہ سے زیادہ مشرقِ وسطی سے متعلق کھانے کی جگہوں کے بڑھتے ہوئے رجحان کے ساتھ، اس کُزین کے دونوں ذائقے، نمکین اور میٹھے، روایتی یورپی ڈشز میں شامل ہوتے جا رہے ہیں۔

شکشُکا مشرقِ وسطی کُزین کی بریک آؤٹ ڈشز میں سے ایک ہے۔ یہ دنیا بھر کے مینیوز میں ناشتے کے لیے ایک اہم ڈش بن گئی ہے۔

پیزا ہوا پُرانا: پائیڈ کو اکثر فلیٹ بریڈ پیزا کہا جاتا ہے، پر یہ ٹرکش ڈلائٹ اپنے اطالوی ہم منصب سے زیادہ مشہور ثابت ہو رہی ہے۔ اور پائیڈ کی مکھن اور ذائقے دار ٹاپنگز سے سمجھ آتی ہے اس کی مشہوری کی وجہ۔

کلینری تجاویز اپنے انبوکس میں حاصل کرنے کے لیے ہمارے نیوزلیٹر کے لیے سائن اَپ کریں.